81

پاکستان کی موثر خارجہ پولیسی کی بدولت امریکہ اور ایران کے درمیان کشیدگی کم ہوئی

امریکہ اور ایران کے درمیان پاکستان نے ثالثی کا کردار ادا کرکے خطے کو بہت بڑی تباہی سے بچا لیاہے اگر امریکہ اور ایران کے درمیان جنگ ہو جاتی تو اس میں پاکستان کو سیاسی و معاشی طور پر نقصان ہوتا، بروقت پاکستان کی خارجہ پولیسی نے اس اہم موڑپر جوکردار ادا کیاہے یقینا وہ قابل تحسین ہے بلخصوص وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کی دانشمندی کا بھی ہمیں اعتراف کرنا چاہئے انہوں نے اتنے بڑے مسئلے کواحسن طریقے سے سلجھایا ہے۔ گزشتہ دنوں وزیر اعظم عمران خان نے ورلڈ اکنامک فورم میں پاکستان کی پر امن پالیسی کو جس طرح پیش کیا وہ اہمیت کی حامل ہے انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے پاکستان اور بھارت کے تعلقات خوشگوار نہیں ہیں۔ ہم نے ایران اور سعودی عرب میں کشیدگی ختم کرانے کی کوشش کی۔ ٹرمپ کو کہا کہ امریکہ اور ایران کے درمیان جنگ نہیں ہونی چاہیے۔ مجھے سمجھ نہیں آتی کہ ممالک تنازعات کا حل فوجی طاقت سے کیوں کرتے ہیں۔ وزیر اعظم عمران خان نے ڈیووس میں عالمی اقتصادی فورم سے خطاب میں کہا ہے کہ بچپن سے ہی مجھے پاکستان سے پیار تھا۔ پاکستان کے پہاڑی علاقے بہت خوبصورت ہیں۔ خواہش تھی کہ پاکستان کو فلاحی ریاست بنایا جائے۔ میں نے بچپن میں ہمالیہ کے پہاڑوں پر چھٹیاں گزاریں۔ شہروں میں آلودگی خاموش قاتل بن گئی ہے۔ خیبر پی کے میں بلین ٹری سونامی کامیابی سے ہمکنار ہوا۔ دہشتگرد ی کیخلاف جنگ میں 70 ہزار پاکستانیوں نے قربانیاں دیں۔ نائن الیون کے بعد پاکستان میں بم دھماکے دیکھنے میں آئے۔ نائن الیون کے بعد پاکستان میں سکیورٹی کی صورتحال خراب ہوئی۔ ہم نے جب حکومت سنبھالی تو کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ انتہا پر تھا۔ حکومت ملی تو ملک تاریخی معاشی بحران کا شکار تھا۔ معاشی حالت کی بہتری کیلئے مشکل فیصلے کیے۔ سخت معاشی فیصلوں کی وجہ سے ایک سال میں جتنی عوامی تنقید کا سامنا کیا زندگی میں کبھی نہیں رہا۔ اس سال ہم اقتصادی گروتھ کیلئے کام کررہے ہیں۔ سی پیک کے تحت پاکستان میں زراعت کی پیداوار میں اضافے کے منصوبے شامل ہیں۔ بدقسمتی سے پاکستان اور بھارت کے تعلقات خوشگوار نہیں ہیں۔ ہم نے ایران اور سعودی عرب میں کشیدگی ختم کرانے کی کوشش کی۔ پاکستان میں سونے اور چاندی کے قیمتی ذخائر ہیں۔ حکومت کی تمام تر توجہ معدنی وسائل کو بروئے کار لانے پر ہے۔ نوجوانوں کو ہنرمند بنانے کیلئے پروگرام وضع کیا گیا۔ ملک میں سرمایہ کاری لا رہے ہیں، روزگار کے مواقع فراہم کیے ہیں۔ پاکستان میں کوئلے کی بھی بڑے پیمانے پر ذخائر موجود ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
پاکستان میں آٹا کا مصنوعی بحران سے شہریوں کو پی ٹی آئی کی حکومت سے مایوسی ملی ہے حکومت ایک بحران سے نکلتی ہے تو دوسرا سر اٹھالیتاہے سنا ہے آٹا کے بعد چینی کابحران کا بھی خدشہ ہے اللہ پاک کرم کرے اسقدر حالات ہونگے اسکی تواقعات نہیں تھی اب تو شہریوں نے یہ بھی کہناشروع کردیاہے کہ نئے پاکستان سے پرانا پاکستان بہترتھا خیر اس طرح کے بحران کوئی نئی بات نہیں ہے مشرف دور میں بھی اس طرح کے بحرانوں کاعوام نے سامناکیاتھا ان بحرانوں سے بچنے کیلئے حکومت موثر پالیسی بنائے تاکہ عوام کو مایوسی نہ ہو۔
………………………………
بھارت میں متنازعہ شہریت بل کی وجہ سے بھارتی مسلمان آج کل سڑکوں پر ہیں ان مظاہروں سے یہ بات تو طے ہوگئی ہے کہ بھارتی مسلمان پہلے دو قومی نظریے کی کھل کرمخالفت کرتے تھے اب موجودہ حالت کے پیش نظر وہ اس بات کومان رہے ہیں اور پاکستان کے وجو د کو تسلیم کرتے ہوئے نظر آتے ہیں۔ بھارتی انتہا ء پسند ہندو ؤں نے اپنا شکنجہ مسلمانوں کی خلاف سخت کردیاہے اب جہان عام بھارتی مسلمان پریشان نظر آرہا ہے وہیں بالی ووڈ سپر سٹار بھی لفظو ں کی جنگ لڑرہے ہیں نصیر الدین شاہ اور انم پم کھیر کے درمیان سخت جملوں کا مقابلہ ہورہاہے جبکہ بہت سے بھارتی مسلمان اداکا راس وقت خاموشی اختیار کیے ہوئے ہیں۔ دیکھتے ہیں اونٹ کس کروٹ بیٹھتا ہے برحال جس طرح بھارت کے حالات ہیں اللہ تعالیٰ مسلمانوں پراپنا کرم کرے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں